کراچی میں حسن علی کیساتھ ڈکیتی کی انوکھی واردات

کراچی کی سڑکوں پر بڑھتا ہوا کرائم ریٹ یہاں کے رہنے والے لوگوں کو بہت پریشان کرتا ہے. ہر آئے گئے دن ہمیں کراچی میں ڈکیتی سے متعلق خبریں سننی پڑھتی ہیں. اس روشنیوں کے شہر میں آپکو مزے مزے کھانے اور دل کے صاف لوگ تو ملتے ہیں لیکن حکومت کی ناقص کارکردگی کے باعث اس خوبصورت شہر میں جرائم پیشہ عناصر بڑھتے جارہے ہیں.

حال ہی میں گلشن اقبال کے رہائشی حسن علی کے ساتھ ڈکیتی کی واردات پیش آئی. ان بھائی صاحب کے صرف پیسے ہی نہیں بلکہ اہم دستاویزات اور کریڈٹ کارڈز بھی چوری ہوگئے. حسن نے بتایا کہ ڈاکو ان سے انکا بٹوا لیکر فرار ہو گئے جس میں انکا شناختی کارڈ، کریڈٹ کارڈ، یونیورسٹی کارڈ، اور کچھ اہم دستاویزات موجود تھے. اور سب سے حیران کن بات یہ تھی کہ چور نے چوری کرنے کے 3 منٹ بعد ہی حسن کے کریڈٹ کارڈ سے 1000 روپے نکلوا لیے.

loading...

حسن نے جلدی سے الفلاح بینک کی ہیلپ لائن پر کال کی اور ان سے پوچھا کہ یہ پیسے کہاں سے نکلواۓ گئے ہیں؟ تو بینک والوں نے انتہائی لاپرواہی کا مظاہرہ کرتے هوئے کہا کہ ہمارے سسٹم سے چیز پتا نہیں چل سکتی.

ڈکیتی کے پورے ایک دن بعد حسن کو گھر پر پاکستان پوسٹ کی جانب سے ایک لفافہ موصول ہوا. اس نے جیسے ہی یہ لفافہ کھولا تو اسکے پیروں تلے زمین نکل گئی. لفافے میں حسن کے بٹوے سمیت تمام اہم دستاویزات اور کریڈٹ کارڈ وغیرہ موجود تھے. چور کی یہ اچھی حرکت دیکھ کر حسن بہت حیران ہوا اور دل میں چور کا خوب شکریہ ادا کیا.

اس چور نے حسن کے تین چار ہزار روپے تو کھالیے لیکن اس نے رحم دلی کا مظاہرہ کرتے هوئے حسن کو اسکے تمام کارڈز اور دستاویزات اسکے اڈریس پر واپس بھیج دیے. حسن کہتا ہے کہ میں نے چور کو اسکی اس اچھی حرکت پر معاف کیا!

loading...

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.